Awaz Poetry

کتنی خاموش تھی وہ ہجر کی رات

دل کی دھڑکن سے کان پھٹتے تھے

………….

وہ خوش کلام ہے ایسا کہ اس کے پاس ہمیں

طویل رہنا بھی لگتا ہے مختصر رہنا

………….

ہم لوگ وصال و ہجر پہ روتے ہیں زار و زار

دکھ درد اس سے پوچھئے جسے بھوک کھا گئی

………….

میں اس کو کھو کے بھی اس کو پکارتی ہی رہی

کہ سارا ربط تو آواز کے سفر کا تھا

………….

پھول کی خوشبو ہوا کی چاپ شیشہ کی کھنک

کون سی شے ہے جو تیری خوش بیانی میں نہیں